About RHWF

ریئل ہیومن ویلفیئر فاؤنڈیشن

ہمارے بارے میں جانیں

فائونڈر، پریسیڈنٹ، سی-ای-او، آصف شاہ خان نے انسانیت کی بھلائی اور معاشرے کے مسائل کو دماغ میں رکھتے ہوئے، معاشرے کے لوگوں کو اُنکے بنیادی مسائل سے نجات دلوانے کے ارادے سے کو- فائونڈر کے ساتھ مل کر 2019 میں سوسائیٹیس رجسٹریشن ایکٹ آف 1860کے قانون کے تحد،نون-پروفٹ- آرگینائیزیشن،جوائنٹ اسٹوک کمپنی کراچی ، حکومتِ سندھ سے رجسٹرڈ کروایا، 2020 سے تیزی سے اپنی منزل کی جانب بڑھتی چلی جارہی ہے اور لوگوں کو بہت سی آسانیاں فراہم کرنےکی کوشش میں لگی ہوئی ہے ۔

ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن پاکستان میں سب سے پہلی ، اور بڑی کمیونیٹی مینجمنٹ ٹیم کو ساتھ رکھ کر لوگوں کے دروازے تک جاکر اُنسے انکی مشکلات کے بارے میں انفرادی طور پر معلومات لے کر اُن کو ایک بہترین زندگی اور آسانیاں فراہم کرنے کی کوشش کرتی ہے ۔ ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کی لیگل ممبر شِپ کا طریقہ انہیں سمجھاتے ہوئے اُن کے علاقے میں موجود ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کے رجسٹرار آفس میں اُنہیں لیگل ممبر بنا کر اُن کی زندگی کے سارے مسائل سے نجات حاصل کرنے میں اُنکی مدد کرتی ہے ۔

کمیونٹی مینجمنٹ ٹیم

ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کی کمیونیٹی مینیجمنٹ ٹیم اپنے لیگل رجسٹر ڈممبر کے مسئلوں کو صحیع طریقے سے سمجھتی ہے ، کہ اُنکے اس مسئلے کو کس طرح سے حل کیا جا سکتا ہے، ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کو اپنے ہر لیگل ممبر کی مشکلات کا پوری طرح سے احساس ہے، اُنکے ہر مسائل کو پہلے اپنے بنائے گئے طریقے (ریسرچ، پریپیریشن، لاوئنچنگ) سے گزارنے کے بعد اُنہیں اُنکے مسائل کا ایک بہترین حل فراہم کرتی ہے تاکہ وہ ایک خوش گوار زندگی گزار سکیں۔

ریسرچ

کسی بھی مسئلے کی جڑھ اور اُس کی وجہ ڈھونڈنے کے لئے سب سے پہلی چیز اُس کے بارے میں صحیع سے معلومات حاصل کرنا بہتر ہوتا ہے کیونکہ اگر کسی چیز کے بارے میں ہماری معلومات اچھی ہوگی تو اس پر کام ہم بہترین طریقے سے کام کرسکتے ہیں۔ ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن مسائل کو حل کرنے کے لئے دنیا بھر میں کتنے ممکن طریقےکار ہیں یہ تلاش کرتی ہے پھر انھیں دو حصوں میں تقسیم کرتی ہے جس کے نتائج زیادہ یاکم ہیں ،اور رپورٹ کی بنیا د پر پالیسی بنا کر پریپریشن کے لئے بھیج دیتی ہے۔ ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کا ماننا ہے ،یہ تمام زرائع معاشرے میں پیدا کرنے کی ضرورت ہے تاکہ انسانیت کو لےکر آگے بڑھ سکیں۔

پریپریشن

ریسرچ کی بنیاد پر بہتر منصوبے کو سامنے رکھتے ہوئے اس منصوبے کی تیاری کے لئے ایک انٹرنل ڈپارٹمنٹ بنا کر،اس منصوبے کے ممکن وسائل کو جمع کرتے ہیں، اورخود کو معاشرے کے موجودہ وسائل سے با خبر رکھتے ہیں ۔

لائونچینگ

ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن منصوبے کو مکمل طور پر تیار کر کے ، ہائی ٹیک کمیونیٹی مینیجمنٹ ٹیم کے زریعے لوگوں کو دروازے تک جا کر ، اپنے منصوبے اور طریقے کار کو سمجھا کر اُن سے اُن کے مسائل کی معلومات لے کر معاشرے میں موجود لوگوں کی زندگی میں آنے والی مشکلات اور پریشانیوں بنائے گئے سسٹم کے مطابق وہ ہر وسائل فراہم کرتے ہیں جس کے زریعے وہ اپنی آنے والی زندگی میں اپنے مسائل کو خود حل کرنے کے قابل ہوجائیں۔

ویژن

ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کا اہم مقصد معاشرے کے پریشان لوگوں کہ تمام مسائل سے نجات دلاکر اُنکے حقوق مکمل طور پر دلاکر انھیں ایک کامیاب زندگی فراہم کرنا ہے ، ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن اِسے اپنی زمیداری سمجھتی ہے اورہماری خوائش صرف انسانیات کی بھلائی اور معاشرے میں خوشحالی دیکھنے کے ہیں۔ہم لوگوں کو ایک محفوظ مستقبل فراہم کرنا چاہتے ہیں۔

مشن

ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن اپنے تمام پروجیکٹ کو پورا کرنے کے لئے تمام بنیادی مسائل کو حل کرنے کا جزبہ رکھتی ہے اور ہر مکمل کوشش کرکے معاشرے کے لئے بھلائی کا کام اور اُنکے کو حل کر کے اُنکی آنے والی زندگی میں آسانیاں فراہم کرتی ہے۔ ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کا اہم مشن ا س وقت اپنے موجودہ پروجیکٹ پر کام کرنا ہے جو کہ معاشرے میں حد سے زیادہ پہلی ہوئی بے روزگاری کو ختم کر نے کے ہیں ، کیونکہ رئیل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن سمجھتی ہے کہ ہر مسئلے کی جڑھ بے روزگاری ہوتی ہے اگر لوگوں کے اس مسئلے کو حل کردیا جائے تو انسان باقی مشکلات خود بھی حل کرنے کے قابل ہوجاتا ہے ۔

نظریہ

ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کے فائونڈرآصف شاہ خان کا نظریہ بنیادی طور پر ایک سوچ پر مبنی ہے ، اُنکی سوچ یہ ہے کہ اللّہ تعالی نے یہ دنیا بنائی اُس نے انسان کو اُصولِ زندگی کے ساتھ اس زمین پر آزمائش کے لئے بھیجا تاکہ اُنہی اُصولوں کو سامنے رکھتے ہوئے انسان زندگی کی ضروریات اور خوائشات کوپورا کرنے کے لئے محنت سے علم کے زریعے مختلف مہارتیں حاصل کریں اور اُن مہارتوں سے دوسرو ں کو فائدہ پہنچائے اورخود بھی فائدہ حاصل کریں۔خوشحالی سے زندگی گزاریں اور اپنی آزمائشوں کو پورا کرکے واپس آجائیں۔ایک عام انسان اپنی زندگی میں موجود پریشانیوں کی وجہ سے خوش نہیں رہ پاتےکیونکہ اپنی پریشانیوں کو حل کرنے کا علم اور وسائل اُنکے پاس نہیں ہوتے اور پریشانی میں انسان اکژایسے لوگوں کے پاس کے چلے جاتے ہیں جن کے پاس علم اور وسائل نہیں ہوتے یا تو لوگوں کی پریشانیوں کو بڑھا کر لوگوں سے پیسہ کمانا اُن کامقصد ہوتا ہے ایسے دھوکے بازوں کی وجہ سے انسان اپنی پریشانیوں کو بڑھا دیتا ہے اور خوشحال زندگی کی اُمید چھوڑ دیتا ہے ۔وسائل میں کمی اور مسائل میں اضافے کی وجہ سے انسان اپنی زندگی سے اُمید ہی چھوڑدیتا ہے ،اور وہ ایسے کام کرنے لگ جاتا ہے جس کی اجازت اُس کا ضمیر بھی نہیں دیتا ، پریشانیوں میں مبتلا لوگ ہمارے معاشرے میں بڑھتے چلے جا رہے ہیں جس کی وجہ سے ہمارا معاشرا بد سے بدترین ہوتا جا رہا ہے ۔

آخر کیوں اور کب تک ہم پریشانیوں کے لئے دوسروں کو بُرا کہتے رہیں گے یا غلط اُمیدوں کے سہارے زندہ رہیں گے ، جب کے اللّہ رب اُلعزت نے اِس دنیا کو خوبصورتی کے ساتھ چلانے کا طریقہ بتایا ہے ۔حضرت محمدﷺ کا فرمان ہے

ترجمہ:تمام مسلمانوں کی مثال ہمدردی ، محبت ، تعاون و تناثرمیں جسم کی مانند ہے چنانچہ اگر کسی کے ایک عضو میں بھی تکلیف ہو تو پورا جسم بے خوابی اور بخار میں مبتلا رہتا ہے ۔

ریئل ہیومن ویلفئیر فاوئنڈیشن کا بھی یہی یقین اور ماننا ہے کہ ہر انسان کی مثال ایک عضو انسانی کی ہے ،اگر کسی کو کوئی تکلیف ہو ، پریشانی ہو تو تمام انسانوں کو یہ تکلیف اور درد محسوس ہونا چائیے۔اسی احساس کودل میں رکھتے ہوئے ہماری آرگینائیزیشن ہر ممکن طریقے سے ہمارے لیگل ممبران کی تکلیف اور پریشانی کو ختم کرنے کی کوشش کرتی ہے ۔یہی ہمارےمقاصد ہیں جن پر عمل کرکے ہم دنیا میں بھائی چارہ،اخوت ، ہمدردی کی خوش گوار فضاء قائم کرنا چاہتے ہیں۔